سر ورق / معرفت امام زمانؑ / امام مہدی عج کو صاحب الزمان کہنا شرک؟

امام مہدی عج کو صاحب الزمان کہنا شرک؟

سوال: کیا امام زمان عج کو صاحب الزمان کا لقب  دینا،شرک ہے؟

جواب:صاحب الزمان کون ہے؟ اگر امام مہدی عج کو صاحب الزمان کہا جائے تو یہ شرک ہوگا کیونکہ صاحب زمین و زمان خداوندمتعال کی ذات ہے۔

عربی زبان میں صاحب کا معنی ہمراہ،ساتھی،یار اور دوست اور ہمعصر کا ہے۔پس صاحب الزمان یعنی جو زمانہ کے ہمراہ ہے یعنی اس زمانے میں زندہ ہے۔پس اس معنی کی بنا پر شرک نہیں ہے۔

اسکی دلیل آیات قرآنی ہیں جیسے:

“ما ضَلَّ صاحِبُکُمْ وَ ما غَوی”؛[۱]

 تمہارا ساتھی نہ گمراہ ہوا ہے نہ بہکا ہے

 “وَ ما صاحِبُکُمْ بِمَجْنُونٍ” [۲]

تمہارا ساتھی(پیغمبر) دیوانہ نہیں ہے۔

اسکے علاوہ اگر اس صاحب سے مراد مالک بھی لی جائے  تب بھی شرک نہیں ہوگا کیونکہ امام زمان عج کی مالکیت خداوند متعال کی مالکیت کے زیرسایہ اور اسکے اذن سے ہے جیسے:

” … یا أَیُّهَا الَّذینَ آمَنُوا أَطیعُوا اللَّهَ وَ أَطیعُوا الرَّسُولَ وَ أُولِی الْأَمْرِ مِنْکُمْ….”؛ [۳]

ایمان والو اللہ کی اطاعت کرو رسول اور صاحبانِ امر کی اطاعت کرو جو تم ہی میں سے ہیں۔

شیعہ عقیدہ کے مطابق آئمہ معصومین علیہم السلام خداوند متعال کے اذن سے امور جہان پر ولایت تکوینی رکھتے ہیں۔اور یہ خدا کے اذن سے یہ ولایت انہیں سپرد کی گئی ہے۔

[۱] نجم، ۲

[۲]تکویر، ۲۲

[۳]نساء، ۵۹.

ترجمہ و پیشکش: ثقلین فاؤندیشن قم

شاید آپ یہ بھی پڑھنا چاہیں

امام رضا علیہ السلام کی امام زمان عج کے متعلق سفارش

اسے اپنے اور اسکے دشمنوں سےجہاد کی اجازت مرحمت فرما اور مجھے اسکے حامیوں و مددگاروں میں سے قرار دے کہ تو ہرچیز پر قادر ہے