اتنی عبادت آخر کیوں؟

آپ اتنی عبادت کیوں کرتے ہیں آپ فرزند رسول ﷺ ہیں؟

جواب:

طاووس یمانی کہتے ہیں کہ میں کعبہ کے پاس گیا تو میں نے ایک شخص کو کعبہ کے  میزاب رحمت کے نیچے دیکھا جو نما ز و دعا میں مشغول تھا۔ میں اس کی جانب گیا تو دیکھا کہ امام سجاد علیہ السلام ہیں میں نزدیک گیا  اور عرض کی: کیوں آپ نے خود کو اتنی زحمت اور مشقت میں ڈال رکھا ہے جبکہ آپ تین مقامات کے حامل ہیں جن میں سے ہر ایک آپ کو آخرت کی سختیوں سے محفوظ رکھے گا:

1۔ آپ رسول خداﷺ کے فرزند ہیں

2۔ آپ کے جد رسولﷺ کی شفاعت آپ کیلئے ہے

3۔خدا کی رحمت جاری اور موجود ہے۔

امام سجاد علیہ السلام نے میری طرف رخ کیا اور ہر ایک کا قرآن مجید سے جواب دیا اور مجھ سے فرمایا:

پہلے مقام کے متعلق کیا تم نے نہیں سنا  کہ خدا وند متعال قرآن میں فرماتا ہے:

اذا نفخ فی الصور فلا انساب بینهم یومئذ و لا یتسائلون

پھر جب صور پھونکا جائے گا تو نہ رشتہ داریاں ہوں گی اور نہ آپس میں کوئی ایک دوسرے کے حالات پوچھے گا۔

(مؤمنون / ۱۰۱)

دوسرے مقام شفاعت کے متعلق بھی اطمینان نہیں ہے کیونکہ خدا فرماتا ہے:

و لا یشفعون الا لمن ارتضی

اور فرشتے کسی کی سفارش بھی نہیں کرسکتے مگر یہ کہ خدا اس کو پسند کرے 

(انبیاء / ۲۸)

تیسرے مقام رحمت خدا کے بارے میں خداوند متعال فرماتا ہے

ان رحمت الله قریب من المحسنین

 اس کی رحمت صاحبان حسن عمل سے قریب تر ہے

(اعراف / ۵۶)

اور مجھے معلوم نہیں کہ میں حسن عمل والوں میں سے ہوں یا نہیں!

بنابریں شخصیت کا معیار حسب ،نسب ،شفاعت اور حمت الہی نہیں بلکہ خودسازی اور پاکیزہ زندگی ہے۔

حوالہ:  کشف الغمه، ج ۲، ص ۳۰۵ – بحار، ج ۴۶، ص ۱۰۱٫

شاید آپ یہ بھی پڑھنا چاہیں

غزوہ غابہ کب اور کیسے ہوا؟

دشمن نے رسول خداﷺ کے دودھ دینے والے اونٹوں میں سے 20 اونٹ چرا لیے اور ابوذرغفاری رض کے بیٹے وہاں پر محافظ تھے انہیں شہید کردیا اور اسی زوجہ کو قیدی بنا لیا۔