سر ورق / خبریں / ایران: جاری احتجاج کے پشت پردہ مقاصد

ایران: جاری احتجاج کے پشت پردہ مقاصد

تقریبا دو ماہ سے ایران کے مختلف شہروں میں احتجاج جاری ہے اور  اس میں سو سے ایک سوپچاس افراد شریک ہوتے ہیں جن میں تقریبا 10 سے 20 افراد خود کو لیڈر بنا کر پیش کرتے ہیں اور عمومی املاک اور جلاؤ گھیراؤ کی پالیسی پر عمل کرتے ہیں اور باقی صرف تماشائی کا کردار اد اکرتے ہیں۔

اس جاری احتجاج کے مقاصد کیا ہیں؟

1۔جو لوگ اس احتجاج کے پیچھے ہیں وہ عوام کو ساتھ ملانا چاہ رہے تھے تاکہ انہیں میدان میں لایا جائے مگر ناکام ہوئے۔وہ چاہتے ہیں کہ اسی شرارت کے بل بوتے پر حکام کو تھکا دیں لیکن اس میں بھی انہیں غلط فہمی ہوئی کیونکہ ان کاموں کی وجہ سے عوام میں ناراضگی پھیلی اور بے زار ہوئی اب عوام ان سے متنفر ہیں تو ان کاموں کی وجہ سے نفرت میں مزید اضافہ ہوگا۔

2۔ ایسے احتجاج عوام کے لیے درد سر بنتے ہیں ان کے لیے مشکلات ہوتی ہیں کبھی بازار بند تو کبھی روڈ بند تو کبھی کچھ تو کبھی کچھ ہورہا ہے لیکن جو افراد میدان میں ہیں یا جو انکے پیچھے انکی ڈوریاں ہلا رہے ہیں وہ اس قابل ہی نہیں کہ اس مملکت اور دینی نظام کو نقصان پہنچا سکیں۔

3۔یہ احتجاج ایک دن ختم ہوجائے گا اور عوام ایک نئے جذبے اور ولولے کے ساتھ میدان میں اتر کر ترقی کی راہ پر خود کو منوائے گی۔

4۔کہا گیا کہ یہ احتجاج جمہوری اسلامی ایران اور اسکی عوام کے لیے ایک انتباہ ہے مگر اس احتجاج سے عوام نے بہت اچھا استفادہ کیا جیسے اس سال اسٹوڈنٹس ڈے بے سابقہ تھا۔امریکہ مردہ باد کے پرجوش نعرے لگائے گئے اور عوام نے اپنی سمت معین کردی۔

5۔ اس احتجاج سے فائدہ اٹھانے کی دوسری مثال شہید پولیس والوں کا تشییع جنازہ تھا جس میں ہزاروں افراد شریک ہوئے جو ایک ایسے پولیس والے کے جنازے میں آئے جسے وہ جانتے ہی نہ تھے اسکی شہادت باعث بنی کہ لوگ شریک ہوں اور باشکوہ اور عظیم جنازہ ہوا۔

6۔اس جاری احتجاج کو چلانے والوں نے اپنا چہرہ دکھا دیا ہے کہ ایک طرف وہ خود عوام کا طرفدار قرار دیتے ہیں دوسری جانب مسجد اورقرآن جلاتے ہیں ملک سے دشمنی کرتے ہیں قومی ترانے اور پرچم کی توہین کرتے ہیں۔اس سے انکا چہرہ عوام کے سامنے واضح ہوگیا۔

وہ کہتے ہیں کہ ہم عوام کے طرفدار ہیں لیکن یہ عوام تو امام حسین علیہ السلام کو مانتی اور انہیں لیڈر تسلیم کرتی ہے اور یہ امام حسین علیہ السلام کی توہین کرتے ہیں چہلم امام حسین علیہ السلام کی توہین کرتے ہیں  کیا ایسے لوگ عوام کے طرفدار اور حامی ہوسکتے ہیں؟؟

حوالہ: تقریررہبر معظم انقلاب اسلامی،میڈیا

شاید آپ یہ بھی پڑھنا چاہیں

شیراز: حرم شاہچراغ میں دہشتگردوں کی خون کی ہولی،19 شہید،23 زخمی

حملہ آوروں نے مزار کے اندر داخل ہونے کے بعد زائرین پر اندھا دھند فائرنگ شروع کردی جس کے نتیجے میں 19 افراد موقع پر شہید ہوگئے