سر ورق / معرفت امام زمانؑ / اصحاب امام زمان عج  کی صفات کیا ہیں؟

اصحاب امام زمان عج  کی صفات کیا ہیں؟

جواب:

روایات کو مدنظر رکھتے ہوئے اصحاب امام زمان عج کی صفا ت اور خصوصیات  درج ذیل ہیں:

1۔ خدا اور اپنے امام کی گہری معرفت:

امام صادق علیہ السلام سے ایک حدیث نقل کی گئی ہے:

انکے (اصحاب امام ) دلوں میں خدا کے متعلق ذرہ برابر بھی شک نہیں ہے۔1

یعنی اس طرح خدا وندمتعال کی معرفت رکھتے ہیں کہ ان میں تھوڑا سا شک و تردید  بھی نہیں ہے۔

2۔کامل اطاعت:

صحیح معرفت کا نتیجہ امام کی  ہمہ جانبہ اور مکمل اطاعت ہے۔امام صادق علیہ السلام سے نقل ہوا ہے:

امام سے انکی اطاعت ،ایک کنیز کی اپنے آقا سے فرمانبرداری سے زیادہ ہے۔2

3۔ عبادت:

امام صادق علیہ السلام نے انکے بارے میں فرمایا:

راتوں کو عبادت کرکے صبح کرتے ہیں اور دنوں کو روزہ رکھ  کرختم کرتے ہیں۔3 اور یہ حق کی یاد انکے تمام حالات میں جلوہ گر ہوتی ہے۔

اسی طرح فرمایا:

یہ ایسے مرد ہیں کہ گویا انکے دل سیسہ پلائی ہوئی دیوار ہوں۔4

4۔جانثاری اور شہادت طلبی:

امام صادق علیہ السلام نے فرمایا:

امام مہدی علیہ السلام کے اصحاب میدان جنگ و رزم میں آپ کے اردگرد گھومیں گے اور اپنی جان کے ذریعہ آپ عج کی حفاظت کریں گے۔5

اسی طرح فرمایا:

وہ آرزو اور تمنا کریں گے کہ خدا کی راہ میں درجہ شہادت پر فائز ہوں۔6

5۔شجاعت اور دلیری:

حضرت علی علیہ السلام نے انکے بارے میں فرمایا:

یہ سب ایسے شیر ہیں جو کچھار سے باہر آچکے ہیں اور اگر ارادہ کریں  تو پہاڑوں کو بھی اپنی جگہ سے اکھاڑ دیں گے۔7

6۔صبر و بردباری:

امام علی علیہ السلام نے فرمایا:

یہ ایسا گروہ ہیں  جو صبر و برباری کی وجہ سے راہ خدا میں خدا پر احسان نہیں  جتلائیں گے اور خدا کی بارگاہ میں اپنی جان  کا نذرانہ دینے کے سبب خود پر فخر نہیں کریں گے اور اسے بہت بڑا شمارنہیں کریں گے۔8

7۔ اتحاد وہمدلی

وہ اپنی خود خواہی اور اپنی ذای خواہشات  کو خود سے دور کر چکے ہیں اور سب چیزوں کے ایک ہی ہدف کے لیے  طالب ہیں اور ایک پرچم تلے قیام کے لیے اٹھ کھڑے ہونگے۔9

حضرت علی علیہ السلام فرماتے ہیں:

یہ  سب آپس میں یکجان اور ہمآہنگ ہیں۔10

8۔ زہد و تقوی:

امام علی علیہ السلام انکے متعلق فرماتے ہیں:

امام مہدی عج اپنے اصحاب  سے بیعت لیں گے کہ  وہ سونا و چاندی جمع نہیں کریں گے اور گندم و جو  ذخیرہ نہیں کریں گے۔11

ترجمہ و پیشکش: ثقلین فاؤنڈیشن قم ایران

حوالہ: آفتاب مہر ،مہدوی سوالات کے جوابات،ص 103 تا 105

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

مآخذ:

1۔بحار ج 52

2۔روزگار رہائی،ترجمہ علی اکبر مہدی پور،ج 1 ص 414 ،ح 477

3۔منتخب الاثر،فصل 6 ،ب 11،ح 4

شاید آپ یہ بھی پڑھنا چاہیں

اصحاب امام زمان عج کس زمانے سے تعلق  رکھتے ہیں؟

امام عج کے ان ۳۱۳ ساتھیوں میں ایسے بھی ہیں جوعصر ظہور میں موجود ہونگے۔بعض روایات میں آیا ہے  کہ یہ افراد رات کو بستر پرسوئیں گے اور ناپدید ہوجائیں گے اورصبح خود کو مکہ مکرمہ میں پائیں گے۔