سر ورق / مقالات / معصومین / حضرت امام محمد باقرؑ / امام محمد باقر علیہ السلام کی شخصیت

امام محمد باقر علیہ السلام کی شخصیت

شیخ مفید ؒ فرماتے ہیں:

حضرت امام محمد باقر علیہ السلام اپنے والد گرامی حضرت علی ابن الحسین علیہما السلام کے جانشین اور وصی اور انکے بعد مقام امامت پر فائز ہوئے۔آپ فضل و علم و زہد اور بزرگی میں سب سے بڑھ کر تھے اور خاص و عام کی نظروں میں عظیم اور صاحب فضیلت اور اعلی مقام کے حامل تھے۔

امام باقر علیہ السلام سے علم دین ،دینی،سنت و علم  قرآن ،سیرت اور فنون آداب   جتنے ظاہر ہوئے اتنے حضرات حسنینؑ کی کسی فرزند سے ظاہر نہیں ہوئے۔باقی ماندہ اصحاب رسولؓ ،مشہور تابعین اور مسلمانوں کے عظیم فقہاء نے آپ سے معارف دین کے حصول  کے لیے زانوئے ادب تہہ کیے۔

آپ کی اتنی شہرت زیادہ تھی کہ آپ کی مثال دی جاتی تھی اور آپ کے اوصاف شعر و نثر  کی صورت میں ہر جگہ مشہور ہوگئے تھے۔

(الارشاد ص 261)

ابن شہر آشوب کہتے ہیں :

آپ ہاشمی والدین کی نسبت  ہاشمی تھے اور علوی والدین کی نسبت علوی اور فاطمی والدین کی نسبت فاطمی تھے کیونکہ آپ ہی پہلے نومولود تھے جس کے والد امام حسین علیہ السلام کے فرزند اور والدہ امام حسن علیہ السلام کی اولاد تھیں۔آپ کے والد امام سجاد علیہ السلام اور والدہ حضرت فاطمہ ام عبداللہ بنت الحسن تھیں ۔

(المناقب ج 4ص 208)

امام باقر علیہ السلام کے القاب

طبری کہتے ہیں:

آپ کی کنیت ابو جعفر اور لقب باقر ،شاکر،ہادی اور امین تھا۔آپ کو شبیہ بھی کہا جاتا تھا کیونکہ آپ کی رسول اکرم ﷺ سے بہت زیادہ شباہت تھی۔

شیخ مفیدؒ فرماتے ہیں:

حضرت جابر بن عبداللہ انصاریؓ سے نقل ہوا ہے کہ آپ فرماتے ہیں کہ ایک دن رسول خدا ﷺ نے مجھ سے فرمایا کہ امید ہے کہ تم زندہ رہو گے اور میرے ایک فرزند سے ملاقات کرو گے جو نسل حسین سے ہوگا۔اس کا نام محمد ہوگا۔اس سے علم دین  چشمہ کی طرح پھوٹے گا۔پس جب بھی اس سے ملاقات کرو تو اسے میرا سلام کہہ دینا۔

ولادت با سعادت

آپ کی ولادت مدینہ میں بروز جمعہ  اول رجب 57 ہجری قمری میں امام حسین علیہ السلام کی شہادت سے تین سال قبل ہوئی۔

اولاد

 شیخ مفیدؒ کے بقول آپ کی اولاد کی تعداد  7 تھی:1۔ابو عبداللہ جعفر بن محمد2۔عبداللہ بن محمد3۔ابراہیم4۔عبیداللہ۔5 علی6۔زینب7۔ام سلمہ زینب اور ام سلمہ دونوں کی والدہ ایک کنیز تھیں۔

شہادت

آپ کی شہادت 57 سال کی عمر میں 114 ہجری میں شہید ہوئے۔آپ  امام سجاد علیہ السلام کے بعد 19 سال دو ماہ زندہ رہے۔

حاکم وقت

جب امام محمد باقر علیہ السلام کی شہادت ہوئی تو اس وقت حکمران ہشام بن عبدالملک تھا  کیونکہ شہید اولؒ کے بقول ہشام کی حکومت کا دورانیہ 105 سے 125 ہجری تھا۔

ترجمہ وپیشکش: ثقلین فاؤنڈیشن قم

ماخذ: گزیدہ مقتل معصومین علیہم السلام

شاید آپ یہ بھی پڑھنا چاہیں

تاریخ اسلام ،پیغمبرؐ کی ولادت کس تاریخ کو ہوئی؟

جب وفات پیغمبر ﷺ کی تاریخ مسلمانوں میں متفق نہ رہ سکی تو ولادت کی تاریخ میں اختلاف ہونا کونسا تعجب خیز ہے۔غنیمت یہ ہے کہ مہینہ متفق علیہ ہے